The news is by your side.

انصاف کی راہ میں رکاوٹیں دور کرنے کی ضرورت ہے، مولانا عبدالحق ہاشمی

0

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

- Advertisement -

امیر جماعت اسلامی بلوچستان مولانا عبدالحق ہاشمی نے کہا کہ انصاف کی راہ میں رکاوٹیں دور کرنے کی ضرورت ہے عوام کو جلد انصاف فراہم کرنے کیلئے عدالتی نظام میں سالوں سے التواءمقدمات کو فوری نمٹانے کیلئے فی الفورقانون سازی کی جائیں انصاف کو سستا اور عوام کی پہنچ میں لاناوقت کی اہم ضرورت ہے بدقسمتی سے ناکام وخراب عدالتی نظام کی وجہ سے مظلوم عوام نسل درنسل پیشیاں ہورہی ہے مگراس کے باوجود انصاف و فیصلہ ہوتا نظر نہیں آتا سائلین کو پریشانی سے نجات دلانے کیلئے وکلاءکی فیسزپر بھی نظر ثانی کی جائیں تاکہ انصاف کے حصول کیلئے خاندان کو لٹنے کا سلسلہ بند ہوجائیں ۔انہوں نے کہا کہ چیف جسٹس سستا وفوری انصاف کی فراہمی کیلئے عملی کام کریں عوام عدالتی نظام سے پریشان وتکلیف کاشکارہیں پریشانی ومشکل میں نہ صرف سالوں کیس چلتا رہتاہے بلکہ وکلاءکی بھاری فیسزبھی دینی پڑتی ہے جس کی وجہ سے سائلین پریشان اوران کے دکھوں میں دوچند اضافہ ہوجاتاہے ۔ جس معاشرے میں انصاف بگتا ہوجھوٹے گواہ قیمتاًمل جاتاہواور فیصلے میں سالوں لگ کرچالیس پچاس سال بعد ہوتے ہووہاں عوام کیلئے مشکلات اورپریشانیاں ہی ہوتی ہے ۔چیف جسٹس عدالتی نظام کو آسان وسہل بنا دیں انصاف کا بول بالا رکھیں عدالت کے احاتے میں کام کرنے والوں کے بجائے مظلوم پریشان حال عوام کے مفادات اور انصاف کے تقاضے پوراکرنے کا تابع بنادیں تاکہ مظلوموں کو انصاف کی فراہمی جلد وآسان ہو اور بحیثیت قوم ہی مسائل کے دلدل سے نکل آئیں ۔انہوں نے کہا کہ عدالتی نظام ٹھیک ہوجائیں اور اس کے اثرات عوامی ،سیاسی ،حکومتی سطح پر بلکہ پورے ملک پر ان کے بہت اچھے و مثبت ویرپااثرات ہوں گے ۔ ہماراعدالتی نظام قرآن وسنت کے تابع بنادیا جائے تو بہت سے مسائل خود بخو حل ہوسکتے ہیں۔مجرم کو ختم کرنے کے بجائے جرم کاخاتمہ ضروری ہے ۔بدقسمتی سے قرآن و سنت کی تعلیمات سے انحراف بھی مسائل کی جڑہے قرآن کو قانون بناکر ہم قوم کو سستا وفوری انصاف فراہم کرسکتے ہیں قوم کو مسائل کے دلدل سے نکال سکتے ہیں آج قوم جن مسائل وپریشانیوں کا شکار ہیں جس میں سرفہرست بدعنوانی ہے کابنیادی وجہ اسلامی تعلیمات سے سے دوری اور قرآن وسنت کے مطابق فیصلے نہ کرنا ہے اسلامی جمہوریہ پاکستان میں شراب پرپابندی نہیں ۔آئین ودستور تو اسلامی ہے مگر عمل درآمد نہ ہونے کی وجہ سے اس کا کوئی اثر نہیں ہمارا عدالتی نظام بھی ناکامی سے دوچار ہے ۔ کرپشن میں سر سے پاﺅں تک لتھڑے مجرم آزاد پھرتے ہیں۔

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

You might also like