The news is by your side.

بلوچستان اکیڈمی فار کالج ٹیچرز میں یونیورسٹی آف بلوچستان کوالٹی انشورنس ڈائریکٹریٹ کے تعاون سے دو روزہ تربیتی ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا

0

کوئٹہ28جنوری:۔بلوچستان اکیڈمی فار کالج ٹیچرز میں یونیورسٹی آف بلوچستان کوالٹی انشورنس ڈائریکٹریٹ کے تعاون سے دو روزہ تربیتی ورکشاپ کا انعقاد کیا گیا جس میں صوبے کے مختلف کالجز کے فوکل پرسنز کوآرڈینیٹرز کنٹرولرز نے شرکت کی ورکشاپ کا مقصد صوبے میں بی ایس کا پروگرام کامیابی سے چلانے کے لیے ٹیچر فیکلٹی کی تربیت و رہنمائی کرنا اور ان کے استعداد کار بڑھانا ہے۔ اختتامی تقریب منگل کے روز بلوچستان اکیڈمی فار کالج ٹیچرز میں منعقد ہوا۔ ایڈیشنل سیکرٹری ائیر انیڈٹیکنیکل ایجوکیشن حیات کاکڑ اس کے مہمان خصوصی تھے جنہوں نے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ بی ایس پروگرام کو صوبے میں کامیابی سے متعارف کروانے کے لیے وزیراعلیٰ بلوچستان نے خصوصی دلچسپی دکھاتے ہوئے ایک بلین روپے منظور کروائے۔جن کے ذریعے انفرا سٹرکچر کی فراہمی مالی مشکلات اور دیگر بنیادی سہولیات کو مدنظر رکھ کر اقدامات اٹھائے جا رہے ہیں۔انہوں نے کہا کہ بی ایس کی ڈگری قومی اور بین الاقوامی سطح پر انتہائی اہمیت کا حامل ہے جس کو محکمہ تعلیم اور بلوچستان حکومت انتہائی سنجیدگی سے لے رہی ہے انہوں نے کہا کہ ابتدائی طور پر بلوچستان کے 35 کالجز کو جدید ٹیکنالوجی سے ہمہ آہنگ کیا جائے گا تاکہ بی ایس پروگرام چلانے کے لئے کوئی مسئلہ درپیش نہ ہوسکے شرکاء سے جوائینٹ ڈائریکٹر بلوچستان اکیڈمی فار ٹیچرز شبانہ سلطان نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ان کا ادارہ کالجز اور یونیورسٹیوں کے اسٹاف کی استعداد کار بڑھانے میں مرکزی کردار ادا کرتا رہا ہے انہوں نے کہا کہ تربیتی پروگرام کے ذریعے نئی تعلیمی پالیسی بنانے میں اپنا کردار ادا کر رہا ہے۔انہوں نے کہا کہ بلوچستان کے تعلیمی اداروں کی ٹیچنگ فیکلٹی اور تعلیم سے متعلق ان کے خدمات سرانجام دیتے رہیں گے اس کے علاوہ پروفیسر صد اشر ف اور پروفیسر عبدالعلی اشرف نے بھی خطاب کیا ورکشاپ کے بہتر انتظامات کرنے پر جوائنٹ ڈائریکٹر بلوچستان اکیڈمی فار کالج ٹیچرز چیف انسٹرکٹر عظمت اللہ کاکڑ محمد عادل اور اس کی پوری ٹیم کی کاوشوں کو سراہا اور پروگرام کے اختتام پر ایڈیشنل سیکرٹری ہائیر اینڈ ٹیکنیکل ایجوکیشن نے شرکاء میں سرٹیفکیٹ تقسیم کئے۔

You might also like