صوبائی مشیر محنت وافرادی قوت حاجی محمد خان لہڑی نے کہا

0

کوئٹہ 11مارچ:۔صوبائی مشیر محنت وافرادی قوت حاجی محمد خان لہڑی نے کہا ہے کہ میں پورے صوبے کا جائزہ لے رہا ہوں۔ جہاں پرٹیکنیکل سینٹرز کی ضرورت ہوگی۔وہاں پر اس کی تعمیر کی منظوری دیں گے۔ اور جن اضلاع میں یہ فنی تعلیم دینے اور ہنر سکھانے کی ادارے قائم ہیں۔ ان کی افادیت بڑھانے اور فعال بنانے کے لیے ہر ممکن اقدام اٹھائیں گے۔ تاکہ ہمارے صوبے کے نوجوانوں کو ہم عصری تقاضوں کے مطابق ہنر سکھا کر ان کی ذ ہنی, نفسیاتی و معاشی مسائل اور احساس محرومی ختم کرنے میں مدد ملے۔ اور یہی ہماری حکومت کا بنیادی مقصد اور شعار ہے۔ ان خیالات کا اظہار انہوں نے بطور مہمان خصوصی SCSPEB کا جرمنی کے ادارے GiZ کے تعاون سے منعقد کی گئی تقسیم ٹول کیٹ و اسنادکے تقریب میں شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ صوبائی مشیر محنت وافرادی قوت حاجی محمد خان لہڑی نے کہا۔ کہ یہ ہماری خوش قسمتی ہے۔کہ رقبے کے لحاظ سے ملک کے سب سے بڑے صوبے بلوچستان کو اللہ تعالی نے جہاں مختلف نعمتوں اور چار موسموں سے نوازا ہے۔ وہاں اس کی آبادی کو روزگار, زندگی کے بنیادی سہولیات اور ہیومن ریسورس کے حوالے سے مختلف چیلنجز کا سامنا ہے۔ جس کو مدنظر رکھ کر SCSPEB کا یہاں کے نوجوانوں کے بنیادی مسائل کا حل اور انہیں ہنر مند بنانے کیلئے منصوبہ بندی کیساتھ بیش بہا خدمات سرانجام دے رہے ہیں۔ صوبائی مشیر نے مزید کہا۔ کہ مجھے اس بات کی خوشی ہے۔کہ SCSPEB کیساتھ GIZ جیسا اہم ادارہ لوگوں کو علمی,.فنی,معاشی اور روزگار کے موقع فراہم کرنے کے لئے اپنی وسائل اور کاوشیں بروئے کار لا رہے ہیں۔ جس کے نتیجے میں SCSPEB نے GiZ کی مالی و تکنیکی تعاون سے بلوچستان کے 88 طلباء وطالبات کو چار مختلف ٹریڈز ڈریس ڈیزائننگ کمپیوٹر سکیلز برائے طالبات ویلڈنگ اور میسن Mason برائے طلباء میں فنی تربیت دی گئی ہے۔ یہ 88 نوجوان آگے جاکر معاشی طور پر خود کفیل ہونے کے ساتھ ساتھ صوبے کی خدمت میں کلیدی کردار ادا کریں گے۔ تقریب کے اخر میں صوبائی مشیر محنت و افرادی قوت حاجی محمد خان لہڑی نے SCSPEB اور GiZ کا شکریہ اس امید کے ساتھ ادا کیا۔ کہ وہ مستقبل میں بھی اسی طرح کی خدمات کو دوام بخشیں گے۔ اور ہمارے صوبے نوجوانوں کو و فنی تربیت کے حوالے مزید مواقع فراہم کریں گے۔

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.