شاہوانی اور ریکی قبائل کے درمیان فائرنگ تنازعہ واقعہ کا تصفیہ

0

شاہوانی اور ریکی قبائل کے درمیان فائرنگ تنازعہ واقعہ کا تصفیہ پرامن طریقے سے حل کروادیاگیا نوابزادہ حاجی لشکری خان

 

رئیسانی سمیت دیگر قبائلی عمائدین کی کوششوں سے دونوں قبائل کے فریقین اپنی اخلتلافات کو ختم کرکے شیروشکرہوگئے
شاہوانی اور ریکی قبائل کے درمیان فائرنگ کے معاملے پر تنازعہ پیدا ہوگیا تھا جس کے باعث دونوں قبائل کے درمیان شدید اخلتلافات پائی جارہی تھی تاہم نوابزادہ حاجی لشکری خان رئیسانی کی سربراہی میں بلوچی میڑھ ریکی ہاوس پہنچی جہاں میڑھ میں بی این پی کے رکن صوبائی اسمبلی ملک نصیراحمد شاہوانی، بی اے پی کے صوبائی رہنما معروف قبائلی شخصیت حاجی میر نوراللہ لہڑی، حاجی میر

 

واحد شاہوانی سمیت دیگر معززین اور معتبرین شامل تھے ریلی قبیلے کی جانب سے بی این پی کے رکن صوبائی اسمبلی ثناء بلوچ، میرزاہد ریکی اور میرعارف جان ریکی سمیت ریکی قبیلے کے معتبرین اور معززین نے بلوچی میڑھ کو خوش آمدید کیا اور نوابزدہ حاجی لشکری خان رئیسانی سمیت دیگر قبائلی عمائدین کے کی جانب سے دونوں قبائل کے فریقین کو تنازعہ ختم کرنے پر آمادہ کیاگیا شاہوانی اور ریکی قبائل کے فریقین نے قبائلی میڑھ اور کی جانے والی تصفیہ کو تسیلم کرتے ہوئے آپس میں پائی جانے والی قبائلی تنازعہ کو ختم کرنے کا اعلان کردیا اس موقع پر نوابزادہ حاجی لشکری خان رئیسانی قبائلی خانگی جرگہ کے شرکاء سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ آج شاہوانی اور ریکی اقوام نے تمام رنجشوں اور اخلتلافات کو ختم کرکے آپس میں بھائی چارے کا واضح ثبوت دیا ہے قبائلی تنازعات صوبے میں امن وامان کی راہ میں سب سے بڑی رکاوٹیں ہیں بلوچستان میں بسنے والے تمام اقوام کوچاہیے کہ وہ اپنے ترقی اور

 

خوشحالی بہتر مستقبل کے لیے قبائلی تنازعات کو ختم کرکے باشعور قومیں ہونے کا ثبوت دیں

You might also like

Leave A Reply

Your email address will not be published.